بریکنگ نیوزپاکستان

بلوچستان کے ضلع واشک میں سکیورٹی فورسز پر حملے میں ایک کپیٹن شہید جبکہ دو جوان زخمی ہو گئے ہیں

فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق ضلع واشک میں گچک کے علاقے ٹوبو میں نامعلوم افراد کی جانب سے نصب کردہ دیسی ساختہ بم سے سکیورٹی فورسز کی گاڑی ٹکرانے کے نتیجے میں فوج کے کیپٹن کاشف ہلاک جبکہ دو اہلکار زخمی ہوئے۔

زخمی اہلکاروں کو طبی امداد کے لیے خضدار منتقل کیا گیا ہے۔

وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان اور وزیر داخلہ میر ضیا اللہ لانگو نے اس واقعے پر دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔

اپنے بیان میں انھوں نے سکیورٹی فورسز پر حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پوری قوم دہشت گردوں کے خلاف متحد ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ بلوچستان میں امن کے قیام کے لیے سکیورٹی فورسز کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی۔

کیپٹن کاشف کی عمر 26 سال تھی اور ان کا تعلق راولپنڈی سے بتایا گیا ہے۔

گچک کہاں واقع ہے؟

گچک انتظامی لحاظ سے ضلع واشک کی تحصیل بیسیمہ کا علاقہ ہے۔ یہ علاقہ کوئٹہ سے جنوب مغرب میں اندازاً ساڑھے تین سو سے زائد کلومیٹر کے فاصلے پر واقع ہے۔


یہ علاقہ بلوچستان کے دو دیگر اضلاع پنجگور اور آواران سے متصل ہے جو کہ ایک دشوار گزار علاقہ ہے۔

آواران اور اس سے متصل پنجگور اور واشک کے سرحدی علاقوں کا شمار ان علاقوں میں ہوتا ہے جو کہ شورش سے زیادہ متاثر رہے ہیں۔

آواران اور اس سے متصل سرحدی علاقوں میں عسکریت پسندوں کے خلاف نہ صرف سکیورٹی فورسز کے آپریشنز ہو رہے ہیں بلکہ ان علاقوں میں عسکریت پسندوں کے حملے بھی جاری ہیں۔

اردو گلوبلی

اردو گلوبلی پاکستانی اردو نیوز ویب سائٹ ہے جہاں آپ کو ہر خبر تک بروقت رسائی ملے گی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button