بریکنگ نیوزپاکستان

افغانستان کو تنہا چھوڑا تو ایک اور نائن الیون ہوسکتا ہے‘ مشیر قومی سلامتی نے خبردار کردیا

عالمی برادری سکیورٹی خلا سے بچنے کے لیے طالبان کے ساتھ رابطہ کرے۔ ڈاکٹر معید یوسف کا انٹرویو

اسلام آباد وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے قومی سلامتی ڈاکٹر معید یوسف نے خبردار کیا ہے کہ اگر افغانستان کو تنہا چھوڑا گیا تو ایک اور نائن الیون ہوسکتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق غیر ملکی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پاکستان نے اب تک طالبان کو تسلیم نہیں کیا ہے عالمی برادری سکیورٹی خلا سے بچنے کے لیے طالبان کے ساتھ رابطہ کرے ، مہاجرین کے پھیلاؤ سے دہشت گردی کو بھی پھیلنے کا موقع ملے گا اس لیے اگر افغانستان کو تنہاچھوڑا تو ایک اور نائن الیون ہوسکتا ہے۔
خیال رہے کہ پاکستان اس سے پہلے بھی واضح کرچکا ہے کہ انسانی المیے اور پناہ گزینوں کے بحران سے بچنے کیلئے عالمی برادری کو طالبان سے بات کرنی ہوگی ، وزیر اعظم عمران خان کے مشیر قومی سلامتی معید یوسف کہتے ہیں کہ عام افغان شہریوں کی خاطر ہمیں ان سے رابطے رکھنے چاہئیں ورنہ ہم پھر اسی جگہ آ کھڑے ہوں گے ، عالمی برادری کو انسانی بحران سے بچانے کیلئے افغانستان کی بھرپور سیاسی اور اقتصادی معاونت کرنی چاہیے ، افغانستان کو ترک کرنا بڑے بحران کا باعث بنے گا ، طالبان کنٹرول میں ہیں ، ہمیں انہیں اپنے وعدے بھولنے نہیں دینا چاہیئے ، عالمی برادری استحکام کیلئےافغانستان کا ساتھ دے ، پاکستان کو موجودہ افغان صورتحال کا ذمہ دار ٹھہرانا درست نہیں ہے۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان نے افغانستان سے 7 ہزار سے زائد افراد کو نکالنے میں مدد کی، پاکستان افغانستان سے آنے والوں کو آمد پر ویزا دے رہا ہے ، پاکستان کو افغانستان کی صورتحال کا ذمہ دار ٹھہرانا سراسرغلط ہے ، پاکستان تو خود افغانستان میں جنگ سے بری طرح متاثر ہوا ، عالمی برادری کو انسانی بحران سے بچانے کیلئے افغانستان کی بھرپور سیاسی اور اقتصادی معاونت کرنی چاہیے کیوں کہ عالمی برادری کی جانب سے افغانستان کو ترک کرنا بڑے بحران کا باعث بنے گا ، اس لیے افغانستان میں امن اور استحکام کیلئےافغانستان کا ساتھ دینا ضروری ہے۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button