پاکستان

پولیو ویکسینیشن مہم

پاکستان نے گزشتہ سات ماہ میں اس بیماری کا ایک بھی کیس رپورٹ نہیں کیا۔ اس سے قبل انسداد پولیو مہم 17 ستمبر کو خیبرپختونخوا میں شروع کی گئی تھی۔ وزیراعظم عمران خان نے اس سال کے شروع میں اس امید کا اظہار کیا تھا کہ پاکستان اگلے سال پولیو سے پاک ہو جائے گا۔

پاکستان نے میں 40 ملین بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کے لیے پیر کو ایک پولیو ویکسینیشن مہم شروع کی ہے۔ رپورٹوں کے مطابق انسداد پولیو مہم کے دوران وٹامن اے کے قطرے بھی پلائے جائیں گے۔ ملک میں انسداد پولیو مہم اور پولیو ورکرز کی تربیت کے تمام انتظامات کیے گئے ہیں۔ فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز سے کہا گیا ہے کہ وہ مہم کے دوران COVID سے متعلقہ SOPs پر عمل کریں۔ انسداد پولیو پروگرام کے کوآرڈینیٹر ڈاکٹر شہزاد بیگ نے ایک نیوز آؤٹ لیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ 40 ملین سے زائد بچوں کو انسداد پولیو کے قطرے اور وٹامن اے کے قطرے پلائے جائیں گے۔ بچوں کے والدین پر بھی زور دیا کہ وہ اپنے بچوں کے مستقبل کو بچانے کی مہم میں تعاون کریں۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button