صحت

14 نیے جین دریافت ھوے ہے جو انسان کے اندر موٹاپے سے بنتے ہیں

سائنسدانوں نے چودہ ایسے جین کی نشاندہی کی ہے جو چربی کو لاتے ہیں اور انسان کو موٹا کرتے ہیں ۔ اس کے ساتھ تین ایسے جین بھی ملے ہیں ۔جن کو سلا کر موٹاپے کو ختم کیا جا سکتا ہے۔

کہانی کی جھلکیاں
  • سائنسدانوں نے چودہ ایسے جین کی نشاندہی کی ہے جو چربی کو لاتے ہیں اور انسان کو موٹا کرتے ہیں ۔ اس کے ساتھ تین ایسے جین بھی ملے ہیں ۔جن کو سلا کر موٹاپے کو ختم کیا جا سکتا ہے۔

دنیا میں اگر ایک جانب غذا کی کمی کا راج ہے۔ تو دوسری جانب سے زیادہ کھانے سے موٹاپا پیدا ہورہا ہے۔ ایک درجن سےزیادہ جین کا پتا چلا ہے ۔ جو موٹاپے کو بڑھاتے ہیں۔ یا پھر روک بھی سکتے ہیں۔

سائنسدانوں نے چودہ ایسے جین کی نشاندہی کی ہے جو چربی کو لاتے ہیں اور انسان کو موٹا کرتے ہیں ۔ اس کے ساتھ تین ایسے جین بھی ملے ہیں ۔جن کو سلا کر موٹاپے کو ختم کیا جا سکتا ہے۔ پروفیسر ایلن اور پروفیسر رابرٹ نے اس کام کو سرانجام دیا۔ موٹاپے کی سیدھی وجہ بننے والے 14 جین دریافت کر لئے۔
اب ماہرین کے مطابق۔ ہم سینکڑوں ایسے جین سے واقف ہیں۔ جو موٹاپے اور دیگر امراض کی وجہ بن سکتے ہیں۔ انفرادی طور پر۔ مگر اس ظاہری کیفیت کا یہ بھی مطلب نہیں ۔ کہ وہی اس بیماری کی وجہ بھی ہوسکتے ہیں۔ اب اس تمام ریسرچ میں اس غیر یقینی سوچ کو ختم کرنے کی کوشش کی ہے۔ اس کے لیے سینکڑوں جین کو ٹیسٹ کرنے والا ایک پائپ لائن نظام بھی متعارف کرایا گیا ہے۔

اب اس نتیجے میں بہت سے جین سامنے آئے ہیں۔ جو موٹاپے کے علاج کی روک تھام میں اہم کردار ادا کرسکتے ہیں ۔ یہ بات ریسرچ سے پتہ چلی ھے۔ زیادہ غذا کے استعمال ۔بےعملی۔ ورزش نہ کرنا۔ میٹھا زیادہ کھانے کا نظام آپس میں مل کر موٹاپے کی وجہ بنتا ہے۔ ان میں جین کا کردار اہم ہوتا ہے ۔ جو جسم میں چکنائی جمع کرتے ھے۔۔
ریسرچ سے انسانی امراض کے علاج کی راہ کھلی ہے۔ اور اس پر نوبل انعام بھی ملے ہیں۔ اس ریسرچ میں کیڑوں کو مشق بنایا گیا۔ جس کے اندر293جین کا انتخاب کیا گیا ۔ اور ان میں 14 جین الگ کئے گئے ۔ تو معلوم ہوا کہ جین کی سرگرمی روک دی جائے ۔تو کیڑے موٹاپے سے محفوظ رہتے ہیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button