بین الاقوامی

ایران کو جوہری معاہدے کی ناکامی پر امریکہ نے خبردار کر دیا

امریکا کے سیکریٹری آف اسٹیٹ انٹونی نے ایران پر تنقید کرتے ہوئے کہا۔ کہ ایران اپنے ایٹمی پروگرام میں امریکہ کی خواہشات کا احترام نہیں کر رہا ۔اور وہ یہ بھی جانتا ہے ۔کہ تہران کے لئے وقت ختم ہو رہا ہے۔

اس بات کا ذکر انہوں نے واشنگٹن میں امریکہ اتحادیوں۔ اسرائیل اور یو اے ای کے سفارت کاروں کے ساتھ ہونے والی بات چیت میں کیا۔ موجودہ ایک دوسرے کے ساتھ تعلقات قائم کرنے والے دونوں ممالک۔ اسرائیل اور یو اے ای کو بھی امریکہ کی طرح تہران سے تحفظات کا خطرہ ہے۔
امریکی سیکریٹری کا کہنا تھا ۔کہ اگر جمہوری طریقہ ناکام ہو جاتا ہے۔ ایران کے ایٹمی پروگرام پر ۔تو امریکہ کے پاس دوسرے آپشن بھی ہے۔ اور ان کے اسرائیلی ہم عصر ۔یابیر لپیڈ نے بھی ایران کو دھمکی دیتے ہوئے ۔واضح الفاظ میں کہا ہے۔ کہ ہم طاقت کے استعمال کا حق رکھتے ہیں۔
انٹونی کا یہ بھی کہنا تھا ۔ کہ ہمیں ایران کے ساتھ مذاکرات کی کامیابی کا پورا یقین ہے۔ اور ہم پوری امید رکھتے ہیں۔ کہ تہران کے لیے گفتگو کا وقت کم سے کم ہوتا جا رہا ہے۔ ایران کو جوہری ہتھیار حاصل نہیں کرنے دیں گے ۔ ہم اس بات پر متفق ہیں۔ اس موقع پر یو اے ای کے وزیر خارجہ نے کہا۔ کہ خطے کو اب یمن میں مزید کسی حسب اللہ کی ضرورت نہیں ہے۔ جو سعودی عرب کی سرحدوں پر دھمکا رہا ہے ۔ اور ہم جنوبی لبنان جیسے تجربے کو یمن میں دوہرا نہیں چاہتے۔
بائیڈن انتظامیہ کی جانب سے تہران کو 2015 میں جوہری معاہدے کو دوبارہ شروع کرنے کی پیشکش کی گئی تھی۔ امریکہ کے سابقہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس معاہدے کو ختم کر دیا تھا۔ جس پر ایران نے پابندیوں میں نرمی نہ کرنے کے وعدے۔ جو امریکہ نے پورے نہ کئے۔ جوہری سرگرمیوں کا آغاز دوبارہ شروع کر دیا تھا

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button