بلاگزپاکستان

مہنگائی اور ایک عام پاکستانی”

وطن عزیز پاکستان میں اس وقت مہنگائی اپنی بلندیوں کو چھورہی ہے اور اشیائے خوردونوش کی قیمتیں آسمان سے باتیں کرتی نظر آ رہی ہیں ۔اور عوام الناس اپنے اپنے زاویۂ فکر سے اس پر اظہار خیال اور تبصرے کرتے نظر آرہے ہیں۔ ایک خام خیال کے مطابق پاکستان میں اس وقت مہنگائی تاریخ کی بلند ترین سطح تک پہنچ گئ ہے جس کی شرح نو فیصد سے زائد بتائی جارہی ہے جو کہ ہماری کمزور معیشت کی عکاس ہے۔پاکستان میں اشیائے خوردونوش سے لے کر بوٹ پالش اور یہاں تک کہ نسوار بھی مہنگی ہوگئ ہے لیکن حکومت وقت بار بار یہ دعویٰ کرتی نظر آئی ہے کہ پاکستان میں پیٹرول اور ڈیزل کی قیمت ابھی بھی دنیا کے بہت سے ممالک سے خاص کر خطے کے بہت سے ممالک سے کم ہے ۔لیکن ماہرین کا کہنا ہے کہ حکومت کو یہ موازنہ محض پیٹرول اور ڈیزل کی قیمت پر نہیں بلکہ روز مرہ استعمال کی ہر چیز پر کرنا چاہئیے یہ کوئی جواز نہیں کہ عالمی منڈی میں مہنگائی ہے تو عوام مہنگائی کے طوفان کو برداشت کرے۔ایک تلخ حقیقت یہ بھی ہےکہ جو لوگ دوسروں کیلئے گھر کا ماہانہ بجٹ پچیس سے تیس ہزار بناتے ہیں ان کے اپنے گھر لاکھوں میں بھی نہیں چلتے۔ اسلئے حکومت عالمی منڈی میں بڑھتی قیمتوں کو جواز بناتے ہوئے دوسرے ممالک میں روزگار کے مواقع اور انکی قوت خرید پر بھی روشنی ڈالے۔ وطن عزیز میں یہ قیمتیں بڑھتی جارہی ہیں لیکن ایک مزدور کی دیہاڑی آج بھی آٹھ سو روپیہ ہے۔میں عمران خان صاحب سے بس اتنا کہونگا کہ بڑے بڑے مافیاز کے سامنے آپکا دفاع ڈٹ کر کرونگا لیکن ایک دیہاڑی دار مزدور سے میں ہارجاتا ہوں۔ اسلئے خدارا مہنگائی کو لگام ڈالیں۔

اردو گلوبلی

اردو گلوبلی پاکستانی اردو نیوز ویب سائٹ ہے جہاں آپ کو ہر خبر تک بروقت رسائی ملے گی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button