بلاگز

ایماندار قیادت اور ترجیحات کا فرق۔۔تحریر محمد احسان

ایماندار قیادت اور ترجیحات کا فرق۔۔
پانامہ پیپرز 2016 کو ریلیز ہوتے ہیں نون لیگ کی حکومت ہوتی ہے ۔ غریب ملکوں کا پیسہ لوٹا گیا ظاہر ہوتا ہے 360 پاکستانیوں کے نام آتے ہیں ۔ کوئی خوشی نہیں منائی گئی کہ ملک کا لوٹا گیا پیسہ ظاہر ہوا ہے ۔۔ ملک کا برسر اقتدار وزیراعظم اور اسکی فیملی خود چور ثابت ہوتے ہیں۔۔ معاملے کو سازش قرار دے کر مٹی پاؤ پروگرام کی تیاری کی جاتی ہے۔ معاملہ دبانے کی پوری کوشش ہوتی ہے۔۔ کسی کے خلاف کوئی انکوائری نہیں ہوتی۔۔ کسی کے خلاف کوئی ایکشن نہیں ہوتا کیونکہ ملک کا وزیراعظم خود چور ثابت ہو رہا تھا۔۔
تب ایک شخص کرپشن کے خلاف علم بغاوت بلند کرتا ہے۔۔ ایک شخص معاملہ سپریم کورٹ لے کر جاتا ہے۔ تحقیقات کا مطالبہ کرتا ہے۔ ایک شخص ساری دنیا سے مطالبہ کرتا ہے کہ کرپٹ حکمرانوں کا محاسبہ کیا جائے۔۔ وہ ایک شخص تھا عمران خان۔۔ پاکستان تحریک انصاف کا چیرمین عمران خان۔۔ یہ بات تاریخ میں لکھی جا چکی ہے کہ کرپشن اور پانامہ پیپرز پر حکمرانوں کے خلاف اٹھنے والا ایک شخص تھا عمران خان۔۔ جس نے روزانہ کی بنیاد پر سپریم کورٹ جا جا کر کیس لڑا۔۔ اس کیس کو منتقی انجام تک لے کر گیا۔ اس کی اپنی ذات پر بھی سوالات اٹھے مگر وہ ڈٹا رہا ۔۔ اپنا نام پانامہ پیپرز میں نا ہونے کے باوجود اس نے اپنی ذات پر اٹھنے والے سوالات کے جوابات دیے اپنے گھر کی منی ٹریل دی۔۔ 20 سالہ کرکٹ کیرئیر میں جو کمایا اس کا حساب دیا۔۔
پھر آتا ہے پنڈورا لیکس۔۔ وزیراعظم عمران خان چیرمین پاکستان تحریک انصاف آدھے گھنٹے میں کرپشن کی اس دلدل کے انکشاف کو ویلکم کیا جاتا ہے۔۔ ایک گھنٹے کے اندر اندر علان کر دیا جاتا ہے کہ کسی کو نہیں چھوڑا جائے گا بلا امتیاز سب کی تحقیقات ہوں گی حتی کہ پارٹی کے اندر علان کر دیا گیا کہ جس جس کا بھی نام آیا ہے وہ اپنے آپ کو خود کلیر کرواے۔۔ تحقیقات سب کی ہوں گی۔۔ 24 گھنٹے میں سپیشل میٹنگ بلائی گئی اور 24 گھنٹے کے اندر اندر کمیشن قائم کر دیا گیا جس کی سربراہی خود وزیراعظم کریں گے۔۔
ترجیحات اور ایمانداری کا یہی فرق قوموں کی تاریخ بدلتا ہے۔ یہ سوچ اور جذبہ قوموں کو آگے لے کر جاتا ہے۔۔ آج مغربی ممالک ہم سے آگے کیوں ہیں صرف اس لئے کہ انہوں نے اسلامی تعلیمات کی پیروی کی اور اعلی اقدار متعارف کروائیں اور عمل پیرا ہوے۔۔
اللہ کا شکر ہے کہ اب ہمیں بھی ایسا حکمران نصیب ہوا ہے جو ایماندار ہے۔ محب وطن ہے۔ اسلامی تعلیمات پر عمل پیرا ہے۔ انشااللہ ایک دن ہم بھی بہت آگے جائیں گے وہ دن اب دور نہیں۔۔
تحریر۔۔۔ محمد احسان

اردو گلوبلی

اردو گلوبلی پاکستانی اردو نیوز ویب سائٹ ہے جہاں آپ کو ہر خبر تک بروقت رسائی ملے گی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button