سیاست

سندھ حکومت میں ایک وائس چانسلر لگانے کی بھی صلاحیت موجود نہیں

صوبہ سندھ کی بدقسمتی ہے

ایک وائس چانسلر لگانے کی قابلیت بھی نہیں سندھ حکومت میں ایسا کہنا ہے چیف جسٹس کا

جب کہ عدالت نے 2 ماہ میں یونیورسٹی کے وائس چانسلر کی تقریریں کا حکم دیتے ہوئے کہا ۔کہ عدالتی حکم پر عمل نہ کرنے کی صورت میں سخت کارروائی ہوگی ۔ چیف جسٹس پاکستان گلزار احمد نے ریمارکس دیئے کہ صوبہ سندھ کی بدقسمتی ہے ۔ یہ ایک وائس چانسلر لگانے کی بھی صلاحیت نہیں ہے ۔ سپریم کورٹ کے حکم کے مطابق کمیٹی نے نیو رولز بنا سکتی ہیں۔ ڈاکٹرشمس الدین نے تقریریں عمل میں شامل ہونے کے لیے درخواست دائر کر رکھی ہے۔ اور عدالت نے 14 اکبوتر کو پیپلز یونیورسٹی کے واس چانسلر کی تقرری کا حکم دیتے ھوے ۔ اس کام کے لیے پہلے اشتہار کے حوالے سے کاروای مکمل کرنے کی ہداہت کی تھی

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button