بین الاقوامی

روس کا کہنا ہے کہ اگر طالبان چاہتے ہیں کہ دنیا ان کو تسلیم کرے تو وہ اپنے تمام وعدے پورے کریں

طالبان کو صرف اس شرط پر قبول کیا جا سکتا ہے

روس کے ایجی ضمیر کا بلوف نے واضح کیا ہے۔ کہ اگر طالبان چاہتے ہیں کہ ان کو دنیا تسلیم کریں ۔تو وہ وعدے پورے کریں۔

ماسکو میں ہونے والے مذاکرات میں روس کے ایلجی ضمیر کابلوف نے کہا ۔ طالبان نے چین اور پاکستان سمیت شرکا کو انسانی حقوق کی فراہمی یقینی بنانے کے لئے گورننس مساہل کو حل کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے ۔ انہوں نے مزید کہا۔ کہ طالبان کو صرف اس شرط پر قبول کیا جا سکتا ہے۔ پہلے اپنے تمام وعدے پورے کرے ۔جب وہ انسانی حقوق کے حوالے سے بین الاقوامی توقعات پر پورا اترنا چاہئیں اور اپنے وعدے پورے کریں۔ جبکہ روس کے ایلجی نے عالمی برادری پر زور دیتے ہوئے کہا ۔ کہ وہ اپنے تمام اختلافات ختم کر کے افغان عوام کی مدد کریں۔ ان کا مزید کہنا تھا۔ کہ افغانستان میں نئی حکومت کو کوئی پسند نہیں کرتا۔ لیکن حکومت کو سزا دینا ۔ افغانستان کی پوری عوام کو سزا دینا ہے ۔
یاد رھے۔ افغانستان کے اندر موجودہ صورتحال کے پیش نظر روس ۔ پاکستان۔ چین۔ اور امریکہ کے احکام کا مشترکہ اجلاس بلایا گیا تھا۔ لیکن امریکہ نے اس اہم میٹنگ میں شرکت نہیں کی۔

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button