بریکنگ نیوز

پنجاب میں امن و امان اور کالعدم تنظیم سے نپٹنے کے لیے رینجرر بلانے کا فصلیہ

فرانس کا سفارت خانہ بند نہیں کر سکتے جبکہ کالعدم تنظیم نے راستے کھولنے کا وعدہ پورا نہیں کیا

ہم چاہتے ہیں پاکستان میں امن وامان ہو پاکستان پر کافی دباؤ ہے وزیر داخلہ

وزیر داخلہ کا کہنا ہے کہ کالعدم تنظیم سے چھ مرتبہ رابطے کیے ہیں اور پھر ان کی قیادت سے کافی مذاکرات بھی کیے ہیں لیکن ایسا لگتا ہے کہ یہ تنظیم عسکریت پسند ہو چکی ہے لاہور سمیت پورے پنجاب میں امن و امان کی صورتحال کے لیے اختیارات ساٹھ دن کے لئے رینجرز کے حوالے رہیں گے ٹی ایل پی کی فائرنگ سے 4 پولیس اہلکار جاں بحق ہوئے ہیں ہم چاہتے ہیں کہ ملک میں امن و امان ہوں وزیر داخلہ نے مزید گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان پر دباؤ ہے خدشہ ہے کہ کالعدم قرار دی گئی تنظیم عالمی دہشت گرد تینظیموں میں نہ آجائے پھر ان کے تمام کیسز ہمارے اختیار میں نہیں ہوں گے وزیر داخلہ کا مزید کہنا ہے کہ فرانس کا سفیر پاکستان میں نہیں ہے فرانس کا سفارت خانہ بند نہیں کر سکتے جبکہ کالعدم تنظیم نے راستے کھولنے کا وعدہ پورا نہیں کیا جب کہ میں اپنے وعدے پر قائم ہوں یہ خاموشی سے واپس چلے جائیں سادھوکی کے قریب اس تینظیم کی فاہرنگ سے 3پولیس اہلکار جاں بحق ہوئے اور ستر کے قریب زخمی ہوئے جن میں آٹھ کی حالت تشویشناک ہے

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button