بین الاقوامی

مسلمانوں کے خلاف ظلم و ستم کا سلسلہ بھارت میں جاری

وہ خوش قسمت ہیں کہ وہ پاکستان میں پیدا ہوئے اور پاکستان میں انہیں ہر قسم کی مذہبی آزادی حاصل ہے

تین مساجد شہید پندرہ کے قریب توڑپھوڑ اور 21 واقعات میں مسلمانوں کو نشانہ بنایا گیا

بھارت کی ریاست تریپورہ میں مسلمانوں پر ظلم و ستم کے واقعات جاری جس کے دوران دو مساجد کو بھی شہید کیا گیا اور ریاست کے اندر 21 مقامات پر مسلمانوں کو نشانہ بنایا گیا اور پندرہ مساجد میں توڑ پھوڑ کی گئی جبکہ تمام واقعات میں ابھی تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی یاد رہے کہ بھارت کی پاکستان سے شکست کے بعد مسلمانوں پر تشدد کے واقعات میں اضافہ ہوا ہے بھارت میں ایسے شدت پسند عناصر موجود ہیں جو اپنے نظریات کی بنیاد پر دوسروں پر حملہ کرتے ہیں اور انہیں نقصان دیتے ہیں بھارتی سپریم کورٹ کی خاموشی بھارت میں موجود مسلمانوں اور پوری دنیا کے لئے سوالیہ نشان ہے جب کہ رہنما گوپال سنگھ چاولہ کا کہنا ہے کہ بھارت میں انتہا پسند ہندوؤں نے سکھوں کے ساتھ مسلمانوں کا بھی جینا دشوار کر دیا ہے اور بھارت میں سکھوں اور مسلمانوں کو ایک ہوکر ظلم کے خلاف آواز اٹھانی چاہیے انہوں نے مزید گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وہ خوش قسمت ہیں کہ وہ پاکستان میں پیدا ہوئے اور پاکستان میں انہیں ہر قسم کی مذہبی آزادی حاصل ہے

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button