بین الاقوامی

افغان سرحد پر تاجکستان کے لیے فوجی اڈا چین بنائے گا

فوجی اڈے کو تاجکستان پولیس کے حوالے کیا جائے گا

85 لاکھ ڈالر کی مالی امداد اور تکنیکی سہولیات چین فوجی اڈے کے لئے فراہم کرے گا

تاجکستان کی طرف سے اس بات کی تصدیق کی گئی ہے کہ چین افغانستان کی سرحد پر تاجکستان پولیس کے لیے فوجی اڈہ بنائے گا جس کا مقصد افغان سرزمین پر شدت پسند گروپوں کے حملوں کو روکنا ہے اور نقل و حرکت پر نظر رکھنا ھے تاجکستان کے ایک پارلیمنٹ کے ترجمان نے نام نہ ظاہر کرنے کی شرط پر اے ایف پی کو بتایا کہ پارلیمنٹ نے پہاڑی صوبہ گورنو بدخشاں کے ضلع میں فوجی اڈے بنانے کی منظوری دے دی ہے ترجمان نے مزید بتایا کہ چین 85لاکھ ڈالر کی مالی امداد فراہم کرنے کے ساتھ ساتھ تکنیکی سہولیات فراہم کرنے کا بھی وعدہ کیا ہے فوجی اڈے کو تاجکستان پولیس کے حوالے کیا جائے گا

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button