صحت

کرونا وائرس سے بچاؤ میں ڈپریشن کی کم خرچ دوا بھی مفید ہے

ان میں کرونا وائرس کی شرح 30 فیصد سے بھی کم دکھائی دیں گی

2007 میں ڈپریشن کے لیے تجویز کی جانے والی دوا کرونا وائرس کے خلاف مفید پای گی

امریکی ادارے ایف ڈی اے نے ڈپریشن کے علاج کے لیے 2007 میں فلووو کساماہن کی منظوری دی تھی جو مختلف تجارتی ناموں سے پاکستان سمیت دنیا بھر میں عام دستیاب ہے اس دوائی کی آزمائش اقوام متحدہ کے ٹو گیدر پروگرام کے تحت برازیل میں اسی سال پندرہ جنوری سے 16 اگست تک جاری ہے جن میں سے 1472 ایسے مریض بطور رضاکار شامل کیے گئے جن میں کرونا وائرس کی ابتدائی مرحلے پر تشخیض ہو چکی تھی ان میں سے 10 دن تک 739 مریضں کو اس دوا کا استعمال کروایا گیا اس دوا کی سو ملی گرام والی دو گولیاں اور جبکہ سات سو تیس افراد کو دوسری بےزرر پلاسیبو کھلائیں گی دوا شروع ھونے کے 28 دن بعدتک ہر مریض کو زیر مشاہدہ رکھا گیا اور ان میں بیماری کی شدت بڑھنے نا بڑھنے پر نظر رکھی گی۔ جن مریضیوں کو 28 دن فلووو کساماہن استمال کروای گی تھی ان میں کرونا وائرس کی شرح 30 فیصد سے بھی کم دکھائی دیں گی

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button