پاکستان

بھارت میں ہونے والی سلامتی کانفرنس میں پاکستان کا شرکت کرنے سے انکار

بھارت میں ایسے واقعات سامنے آ رہے ہیں کہ جس میں مسلمانوں کو تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے

بھارت امن کو خراب کرنے کا کردار رکھتا ہے ایسے میں وہ امن کا قیام کیسے کر سکتا ہے پاکستان کا مواقف واضع

دفتر خارجہ کے ترجمان معید یوسف کہنا ہے کہ از بکستان کے قومی مشیر تین روزہ دورے پر پاکستان آئے ہوئے ہیں اور آج صبح اس ازبکستان نے قومی سلامتی کے حوالے سے مشترکہ پروٹوکولز پر دستخط بھی کیے ہیں ان کا مزید کہنا ہے کہ بھارت میں ہونے والے قومی سلامتی کے اجلاس میں شرکت نہیں کریں گے پاکستان نے بہت بار کہا کہ اگر بھارت اپنے آپ کو درست کرلے تو ہم بات چیت کرنے کے لئے تیار ہے مگر بھارت کا کردار امن کو تباہ کرنے والا ہے وزیراعظم عمران خان نے بار بار یہ بات کرتے ہیں کہ پاکستان جغرافیائی معاشی ضابطوں میں اپنے آپ کو منتقل کر رہا ہے بھارت کی کشمیر میں ظلم و ستم کی انتہا پوری دنیا کے سامنے ہے مگر عالمی دنیا نے اس پر آنکھیں بند کی ہوئی ہے معید یوسف نے کہا کہ چین کے ساتھ سی پیک پر کام جاری ہے اور افغانستان پر پاکستان اور ازبکستان کا موقف ایک ہے ان کا مزید کہنا تھا کہ بھارت امن کی بات کرنے سے پہلے کشمیر میں ظلم و ستم کا سلسلہ بند کرے اور کشمیریوں کو ان کے حقوق دے بھارت نے کشمیر کے مسلمانوں کے ساتھ ساتھ بھارت نے اپنے ملک کے اندر مسلمانوں کا جینا مشکل کر دیا ہے۔ آئے دن بھارت میں ایسے واقعات سامنے آ رہے ہیں کہ جس میں مسلمانوں کو تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button