بین الاقوامی

امریکہ نے کہا چین توقع سے کہیں زیادہ تیزی سے جوہری ہتھیار تیار کرنے میں مصروف ہے

ا جوہری ہتھیاروں کے ذخاہر میں توصیف ہمارے لئے بہت تشویشناک ہے

چین کے جوہری ہتھیاروں کا حجم سے ڈھائی گنا زیادہ ہے

چین کے پاس 2027 تک 700ڈیلیوری نیو کلر وارہیڈ ہو سکتے ہیں 2030 تک یہ تعداد ایک ہزار تک پہنچ سکتی ہے دوسری طرف چین کے ہائپر سونک میزائل کے تجربے پر امریکا حیران جوہری ہتھیارروں کا حجم اس سے28 گناہ زیادہ ہے جو پینٹاگون نے صرف ایک سال پہلے کیا امریکا نے چین اپنے زمینی سمندری اور ہوا پر مبنی جوہری ترسیل کے پلیٹ فارمز کی تعداد میں سرمایہ کاری اور توسیع میں مدد کے لیے ضروری بنیادی ڈھانچے کو تعمیر کر رہا ہے چین کے ساتھ کشیدگی بھارت کا جوہری صلاحیت کے حامل میزائل کا تجربہ ہے امریکی دفاع کی جانب سے کہا گیا جوہری ہتھیاروں کے ذخاہر میں توصیف ہمارے لئے بہت تشویشناک ہے انہوں نے کہا کہ ان ارادوں کے بارے میں سوال اٹھتا ہے

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button