بریکنگ نیوز

عمران خان کے عوام کو ریلیف پیکیج کی حقیقت کیا ہے

و اپوزشین نے مہنگائی کے خلاف مظاہروں کا اعلان کیا تھا

ایک طرف چینی آٹا مافیا مہنگائی کر رہے ہیں دوسری طرف حکومت ان کو روکنے کی بجائے مافیا کو ہی فائدہ دے رہی ہے ایسے اقدامات کے ذریعے

عمران خان نے عوام کو سبسڈی کے ذریعہ ریلیف دینے کا اعلان کیا جس کو عمران خان نے ملک میں فلاحی ریاست قائم کرنے کے لیے ملک کا سب سے بڑا فلاحی پروگرام قرار دیا۔ ابھی تو اپوزشین نے مہنگائی کے خلاف مظاہروں کا اعلان کیا تھا کہ وزیراعظم نے ریلیف پیکج کا اعلان کردیا سب سے اہم ترین سوال یہ ہی ہے کہ اس ریلیف پیکج سے عوام کو فائدہ ہوگا بھی کہ نہیں اس پیکج کے ذریعے120 ١رب ملک کے 13 کروڑ افراد کو دیے جائیں گے اب اس رقم کو ماہانہ بنیادوں پر تقسیم کیا جاے۔ تو حکموت اگلے ہر 6ماہ تک ہر ماہ 20 ارب روپے کی سبسڈی فراہم کرے گی اگر اس رقم کو 13 کروڑ عوام میں تقسیم کر دیا جائے تو سبسڈی کی رقم 153 روپے اور چند پیسے فی کس ماہانہ بنتی ہے اب اس رقم کو 13 کروڑ افراد کے اندر تقسیم کر کے دیکھیں تو یہ رقم 923 روپے فی کس کے حساب سے بنتی ہے اگر اس فی کس رقم کو موجودہ ڈالر کی قدر ایک سو ستر روپے سے تقسیم کرلیا جائے اس کا مطلب یہ ہوا کہ حکومت آئندہ چھ ماہ کے دوران تیرہ کروڑ افراد کو فی کس پانچ ڈالر 40 سنٹینس دے گی اب اس پیج کو کیا کہا جائے

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button